Moulana Qari Muhammad Rafiq, explaining an incident of Shaykh Binnory’s (rahimahullah) deep love of the Quran Sharif, writes:

Shaykh Binnory (rahimahullah), expressing his shukr (gratitude) to Allah Ta’ala, says:

“One day a Qari, who was my friend, came to meet me. This was in the last few days of Ramadan. He used to read Quran very beautifully. I said to him: “Instead of wasting time, let us read nafl Salah.” Accordingly, the Qari made niyyah of nafl Salah and I followed behind him. Then what more can I say? He started reciting and I derived enjoyment and pleasure. He continued like an express train passing though stations of Surahs and before the time of sehri, he completed the entire Quran in two rak’ahs.”

(Jamal e Yusuf, Pg. 103)

04/05/2020

__________

التخريج من المصادر

جمال ِیوسف (ص ۱۰۳): تحدیث بالنعمۃ کے طور پر فرمایا کرتے کہ: ایک روز ایک قاری صاحب جو میرے دوست تھے میری ملاقات کے لئے تشریف لے آئے رمضان شریف کے اخیری ایام تھے وہ بڑا نفیس قرآن پڑھتے تھے میں نے کہا کہ بجائے وقت گزارنے کے چلو نفل پڑھتے ہیں، چنانچہ ان قاری صاحب نے نفل کی نیت باندھ لی اور میں نے ان کی اقتداء کی۔ بس پھر تو کیا پوچھنا وہ تو پڑھتے چلے گئے اور میں لطف اٹھا تا چلا گیا اور ایکسپریس گاڑی کی طرح سورتوں کے اسٹیشنوں کو طے کرتے چلے گئے اور سحری سے پہلے پورے قرآن کریم کو دورکعتوں میں ختم کر ڈالا ۔